Buzcorner
right way » blog » نواب شاہ میں 13 سالہ لڑکی کے قتل کا ڈراپ سین

نواب شاہ میں 13 سالہ لڑکی کے قتل کا ڈراپ سین

تیرہ سالہ نمرہ رند کے قتل کا ڈراپ سین ہوگیا جس میں قاتل  اس کا سگا بھائی نکلا۔ملزم نے اپنی  بہن کے ساتھ زبردستی زیادتی کی اوربہن کے گھر والوں کو ناجائز تعلقات کا بتانے اور راز کھلنے کے ڈر سے بہن کو قتل کرکے جلا دیا۔

تھانہ جام صاحب کے گاؤں میر حسن رند میں تیرہ سالہ نمرہ کے قتل اور نعش نذر آتش کرنے کی واردات کے ڈراپ سین میں مقتولہ کا اپنا ہی بھائی قاتل نکلا،واقعہ تین دن قبل پیش آیا تھا ایس ایس پی تنویر حسین تنیو کا کہنا تھا کہ پولیس نے جدید سائنٹیفک طریقہ تفتیش سے مقتولہ کے قاتل افتخار رند کو گرفتار کیا،قاتل مقتولہ کا حقیقی بھائی ہے۔ تفتیش کے دوران ملزم نے بتایا کہ اس کے اپنی بہن کے ساتھ ناجائز تعلقات تھے اور وہ اپنی بہن کے ساتھ زبردستی کرتا  رہا تھا اسے ڈر تھا کہ بہن والدین کو بتادے گی اسلیے اس نے بہن کو قتل کیا اور لاش کو جلا کر کھیتوں میں پھینک دی تھی۔

ایس ایس پی تنویر تنیو نے کہا کہ اس شرمناک واقعہ نے انسانیت کو شرما دیا ہے مزید تفتیش جاری ہے۔

مقتولہ کا اپنا ہی بھائی قاتل نکلا،واقعہ تین دن قبل پیش آیا تھا ایس ایس پی تنویر حسین تنیو کا کہنا تھا کہ پولیس نے جدید سائنٹیفک طریقہ تفتیش سے مقتولہ کے قاتل افتخار رند کو گرفتار کیا،قاتل مقتولہ کا حقیقی بھائی ہے۔ تفتیش کے دوران ملزم نے بتایا کہ اس کے اپنی بہن کے ساتھ ناجائز تعلقات تھے اور وہ اپنی بہن کے ساتھ زبردستی کرتا  رہا تھا اسے ڈر تھا کہ بہن والدین کو بتادے گی اسلیے اس نے بہن کو قتل کیا اور لاش کو جلا کر کھیتوں میں پھینک دی تھی۔ ایس ایس پی تنویر تنیو نے کہا کہ اس شرمناک واقعہ نے انسانیت کو شرما دیا ہے مزید تفتیش جاری ہے۔مقتولہ کا اپنا ہی بھائی قاتل نکلا،واقعہ تین دن قبل پیش آیا تھا ایس ایس پی تنویر حسین تنیو کا کہنا تھا کہ پولیس نے جدید سائنٹیفک طریقہ تفتیش سے مقتولہ کے قاتل افتخار رند کو گرفتار کیا،قاتل مقتولہ کا حقیقی بھائی ہے۔ تفتیش کے دوران ملزم نے بتایا کہ اس کے اپنی بہن کے ساتھ ناجائز تعلقات تھے اور وہ اپنی بہن کے ساتھ زبردستی کرتا  رہا تھا اسے ڈر تھا کہ بہن والدین کو بتادے گی اسلیے اس نے بہن کو قتل کیا اور لاش کو جلا کر کھیتوں میں پھینک دی تھی۔ ایس ایس پی تنویر تنیو نے کہا کہ اس شرمناک واقعہ نے انسانیت کو شرما دیا ہے مزید تفتیش جاری ہے۔

Read This:  ڈاکٹر ماہا علی کے بعد ایک اور لیڈی ڈاکٹر خوفناک واقعہ کا شکار

Share

Add comment