Buzcorner

قبر میں دفناتے وقت نومولود زندہ ہوگیا

بنگلادیش میں مردہ قرار دیئے گئے بچے نے اس وقت آنکھیں کھول دیں اور چیخ کر رونے لگا جب اسے قبر میں لٹایا جا رہا تھا۔ بنگلادیش کے دارالحکومت ڈھاکا میں سات ماہ کی حاملہ خاتون شاہین اختر نے قبل از وقت بچے کو جنم دیا جسے ڈاکٹر نے مردہ قرار دیتے ہوئے ایک ڈبے میں رکھ کر والد کو دیا اور کہا کہ اسے  قریبی قبرستان میں دفنا آئے۔

غمزدہ باپ قبرستان گیا تو وہاں قبر کی قیمت زیادہ تھی جس پر اسے ایک اور قبرستان بھیج دیا گیا جہاں سستی قبر مل گئی۔ قبر کھودنے کے بعد جیسے ہی نومولود کو قبر میں اتارنے لگے تواچانک بچے کا جسم حرکت کرنے لگا۔ غریب باپ  فوری طور بچے کو لیکر دوبارہ اسی ہسپتال گیا لیکن جنرل وارڈ میں بستر نہ ہونے کی وجہ سے بچے کو دوسرے ہسپتال لے جا یا گیا جہاں زچہ وبچہ کی طبیعت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔ والدین نے بچے کے زندہ ہونے پر خوشی کا اظہار کیا۔

غمزدہ باپ قبرستان گیا تو وہاں قبر کی قیمت زیادہ تھی جس پر اسے ایک اور قبرستان بھیج دیا گیا جہاں سستی قبر مل گئی۔ قبر کھودنے کے بعد جیسے ہی نومولود کو قبر میں اتارنے لگے تواچانک بچے کا جسم حرکت کرنے لگا۔ غریب باپ  فوری طور بچے کو لیکر دوبارہ اسی ہسپتال گیا لیکن جنرل وارڈ میں بستر نہ ہونے کی وجہ سے بچے کو دوسرے ہسپتال لے جا یا گیا جہاں زچہ وبچہ کی طبیعت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔ والدین نے بچے کے زندہ ہونے پر خوشی کا اظہار کیا۔غمزدہ باپ قبرستان گیا تو وہاں قبر کی قیمت زیادہ تھی جس پر اسے ایک اور قبرستان بھیج دیا گیا جہاں سستی قبر مل گئی۔ قبر کھودنے کے بعد جیسے ہی نومولود کو قبر میں اتارنے لگے تواچانک بچے کا جسم حرکت کرنے لگا۔ غریب باپ  فوری طور بچے کو لیکر دوبارہ اسی ہسپتال گیا لیکن جنرل وارڈ میں بستر نہ ہونے کی وجہ سے بچے کو دوسرے ہسپتال لے جا یا گیا جہاں زچہ وبچہ کی طبیعت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔ والدین نے بچے کے زندہ ہونے پر خوشی کا اظہار کیا۔

Share

Add comment