Buzcorner
right way » blog » ایک ہی لڑکی کی محبت میں گرفتار جڑواں بھائیوں میں سے ایک جان سے گیا

ایک ہی لڑکی کی محبت میں گرفتار جڑواں بھائیوں میں سے ایک جان سے گیا

سرگودھا کے نواحی علاقے ڈیرہ بارے والا میں انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا تھاجس میں ایک ہی لڑکی کی محبت میں گرفتار بھائی نے رقابت کی آگ میں جلتے ہوئے اپنے ہی جڑواں بھائی کو قتل کر دیا۔

پولیس کے مطابق  لڑکی کی محبت میں پاگل رمضان کو جب علم ہوا کہ اس کا بھائی بھی اسی لڑکی کی محبت میں مبتلا ہے جس سے وہ محبت کرتا ہے تو وہ اپنےآپ سے باہر ہوگیا اور اس نے اپنے بھائی عبدالرحمان کو سوتے میں پستول سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ دونوں بھائی جڑواں ہیں اور ان  جڑواں بھائیوں میں ایک منٹ کا فرق تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تین ماہ قبل پیش آنے والے اس قتل کے وقوعے کی جب تھانہ جھال چکیاں پولیس نے تحقیق کی تو شروع میں پولیس کو کوئی سراغ نہ ملا۔ تاہم جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے شواہد اکھٹے کرتے ہوئے جب پولیس نے رمضان کو حراست میں لیا تو اس نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا۔

اور اس نے اپنے بھائی عبدالرحمان کو سوتے میں پستول سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ دونوں بھائی جڑواں ہیں اور ان  جڑواں بھائیوں میں ایک منٹ کا فرق تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تین ماہ قبل پیش آنے والے اس قتل کے وقوعے کی جب تھانہ جھال چکیاں پولیس نے تحقیق کی تو شروع میں پولیس کو کوئی سراغ نہ ملا۔ تاہم جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے شواہد اکھٹے کرتے ہوئے جب پولیس نے رمضان کو حراستاور اس نے اپنے بھائی عبدالرحمان کو سوتے میں پستول سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ دونوں بھائی جڑواں ہیں اور ان  جڑواں بھائیوں میں ایک منٹ کا فرق تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تین ماہ قبل پیش آنے والے اس قتل کے وقوعے کی جب تھانہ جھال چکیاں پولیس نے تحقیق کی تو شروع میں پولیس کو کوئی سراغ نہ ملا۔ تاہم جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے شواہد اکھٹے کرتے ہوئے جب پولیس نے رمضان کو حراست

Read This:  خوشیاں بھرا گھر ماتم میں بدل گیا شادی کے دن دلہا چل بسا

اور اس نے اپنے بھائی عبدالرحمان کو سوتے میں پستول سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ دونوں بھائی جڑواں ہیں اور ان  جڑواں بھائیوں میں ایک منٹ کا فرق تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تین ماہ قبل پیش آنے والے اس قتل کے وقوعے کی جب تھانہ جھال چکیاں پولیس نے تحقیق کی تو شروع میں پولیس کو کوئی سراغ نہ ملا۔ تاہم جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے شواہد اکھٹے کرتے ہوئے جب پولیس نے رمضان کو حراستاور اس نے اپنے بھائی عبدالرحمان کو سوتے میں پستول سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا۔ دونوں بھائی جڑواں ہیں اور ان  جڑواں بھائیوں میں ایک منٹ کا فرق تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ تین ماہ قبل پیش آنے والے اس قتل کے وقوعے کی جب تھانہ جھال چکیاں پولیس نے تحقیق کی تو شروع میں پولیس کو کوئی سراغ نہ ملا۔ تاہم جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے شواہد اکھٹے کرتے ہوئے جب پولیس نے رمضان کو حراست

Share

Add comment